Skip to main content
نعت

شاہ طیبہ دل میں کیا راز نہاں لے کر چلے

By August 19, 2021No Comments

شاہ طیبہ دل میں کیا راز نہاں لے کر چلے
طائر سدرہ جو سوئے آسماں لے کر چلے


میرا مدفن متصل آقا کی تربت سے رہے
بس یہی اک آرزو خردوکلاں لے کر چلے


ہم وطن کو چھوڑ کر اہل وطن سے برکنار
گلستاں بردوش برکف آشیاں لےکر چلے


ہند سے بیزار ہوکے اپنا مسکن چھوڑ کے
سوئے طیبہ اپنے غم کی داستاں لےکر چلے


اے مرے رب وہ مبارک ساعتیں مجھ کو دکھا
جب کہ اخؔتر سوئے طیبہ کارواں لےکر چلے

Was this article helpful?
YesNo