Naatنعت

تیری محفل سجانا مرا کام ہے

By January 16, 2021No Comments

،تیری محفل سجانا مرا کام ہے
اس میں تشریف لانا ترا کام ہے
نعت سننا، سنانا مرا کام ہے
بخشنا، بخشوانا ترا کام ہے

،دین و ایمان کی اور قرآن کی
الفتِ جانِ جاں، جانِ ایمان کی
دل میں شمع جلانا مرا کام ہے
آندھیوں سے بچانا ترا کام ہے

،کوٸی دآتا جہاں بھر میں تجھ سا کہاں
کوئی محتاج دنیا میں مجھ سا کہاں
در پہ جھولی بِچھانا مرا کام ہے
اور دینا دِلانا ترا کام ہے

،عشقِ خیر الوریٰ، غوث و خواجہ،رضا
عشقِ اصحاب اور عشق کُل اولیا
ہے ضروری بتانا مرا کام ہے
اور دل میں بسانا ترا کام ہے

،بعدِ رمضان کہتے ہیں کہ عید ہے
عید تو درحقیقت تیری دید ہے
رہ میں آنکھیں بچھانا مرا کام ہے
اور جلوہ دکھانا ترا کام ہے

،یا نبی! ہم کو در پر بلا لیجیے
چہرہٕ والضحی بھی دکھا دیجئے
تجھ سے ہی لَو لگانا مرا کام ہے،
دل کی حسرت مٹانا ترا کام ہے

،اے خدا! بخش دے مجھ گنہگار کو
کہ درودوں، سلاموں سے سرکار کو
اپنے دل میں بسانا مرا کام ہے
دل مدینہ بنانا ترا کام ھے

،ظلم ڈھایا ہے ہم نے بہت نفس پر
ہیں گناہوں میں ڈوبے ہوئے سر بسر
تیری چوکھٹ پہ آنا مرا کام ہے
رب سے بخشش کر آنا ترا کام ہے

،یا نبی آفتیں سر سے کم کیجئے
اس نفیسِ حزیں پر کرم کیجئے
آفتوں میں بلانا مرا کام ہے
سن کے بگڑی بنانا ترا کام ہے

از – محمد نفیس مصباحی بلرام پوری


Tere Mehfil Sajana Mera Kaam He
Us Mai Tashreef Lana Tera Kaam He
Naat Sunna, Sunana Mera Kaam Hai
Bakhshna, Bakhswana Tera Kaam He

Deen o Iman Ki Aur Quran Ki,
Ulfate Jane Jan Jane Iman Ki,
Dil Mai Shama Jalana Mera Kaam He
Aandhiyon Se Bachana Tera Kaam Hai

Koi Data Jahan Bhar Mai Tujh Sa Kahan,
Koi Mohtaj Duniya Mai Mujh Sa Kahan,
Dar Pai Jholi Bichana Mera Kaam Hai,
Aur Dena Dilana Tera Kaam Hai

Ishq e Khairul Wara, Gaus o Khwaja ,Raza
Ishqe Ashab Aur Ishqe Qul Awliya
Hai Zaruri Batana Mera Kaam Hai
Aur Dil Mai Basana Tera Kaam Hai

Baade Ramzan Kehte Hain Ki Eid Hai
Eid To Dar Haqiqat Tere Deed Hai
Rah Mai Ankhen Bichana Mera Kaam Hai
Aur Jalwa Dikhana Tera kaam Hai

Ya Nabi! Ham Ko Dar Par Bula lijiye
Cherae Wadduha Bhi Dikha Dijiye
Tujh Se He Lau Lagana Mera Kaam Hai
Dil ki Hasrat Mitana Tera Kaam Hai

Ae Khuda! Bakhsh De Mujh Gunahgar Ko
Ki Durudon Salamon Se Sarkar Ko
Apne Dil Mai Basana Mera Kaam Hai
Dil Madina Banana Tera Kaam Hai

Zulm Dhaya Hai Ham Ne Bohat Nafs Par,
Hain Gunahon Mai Dube Hue Sar Basar
Tere Chokhat Pai Ana Mera Kaam Hai
Rab Se Bakhshish Karana Tera Kaam Hai

Ya Nabi Afaten Sar Se Kam Kijiye
Is Nafise Hazin Par Karam Kijiye
Afaton Mai Bulana Mera Kaam Hai
Sun ke Bigdi Banana Tera Kaam Hai

Kalam – Muhammad Nafis Misbahi Balrampuri