Skip to main content

Tera zarrah mahe kaamil hay Yaa Ghaus
Tera qatrah yam e saail hay Yaa Ghaus

Koi saalik hay ya waasil hay Yaa Ghaus
Woh kuch bhi ho tera saail hay Yaa Ghaus

Qad e be saaya zille kibriyaa hay
Tu us be saaya zil ka zil hay Yaa Ghaus

Teri jaageer mein hay sharq taa gharb
Qalamro mein Haram taa hil hay Yaa Ghaus

Dil ishq o rukh husn aaina hain
Aur in dono mein tera zil hay Yaa Ghaus

Teri sham’a dil aara ki tab o taab
Gul o bulbul ki aab o gul hay Yaa Ghaus

Tera majnoon tera sehra tera najd
Teri laila tera mohmal hay Yaa Ghaus

Yeh teri champayi rangat Husaini
Hasan key chaand subh e dil hay Yaa Ghaus

Gulistaan zaar teri pankhari hay
kali sau khuld ka haasil hay Yaa Ghaus

Ugaal us ka udhaar abraar ka ho
Jise teri ulash haasil hay Yaa Ghaus

Ishaare mein kiya jis ney qamar chaak
Tu us mah kaa mah e kaamil hay Yaa Ghaus

Jise ‘arsh e dowam kehte hain aflaak
Woh teri kursi manzil hay Yaa Ghaus

Tu apne waqt ka Siddiq e Akbar
Ghani o Haidar o Aadil hay Yaa Ghaus

Wali kya mursal aayein khud Huzoor aayein
Woh teri wa’z ki mehfil hay Yaa Ghaus

Jise maange nah paayein jaah waale
Woh bin maange tujhe haasil hay Yaa Ghaus

Fuyooz e ‘aalam ummi sey tujh par
‘Iyaan maazi o mustaqbil hay Yaa Ghaus

Jo qarnon sair mein ‘aarif nah paayein
Woh teri pehli hi manzil hay Yaa Ghaus

Malak mashghool hain us ki sanaa mein
Jo tera zaakir o shaaghil hay Yaa Ghaus

Nah kyun ho teri manzil ‘arsh saani
Key ‘arsh e Haq teri manzil hay Yaa Ghaus

Wahin sey uble hain saaton samandar
Jo teri neher ka saahil hay Yaa Ghaus

Malaaik key bashar key jinn key halqe
Teri zau maah e har manzil hay Yaa Ghaus

Bukhaara o Traaq o Chisht o Ajmer
Teri lau sham’ e har mehfil hay Yaa Ghaus

Jo tera naam ley zaakir hay pyaarey
Tasawwur jo karey shaaghil hay Yaa Ghaus

Jo sar dey kar tera sauda kharide
Khuda dey aql woh aaqil hay Yaa Ghaus

Kahaa tuney keh jo maango milegaa
Raza tujh sey tera saail hay Yaa Ghaus

#Aalahazrat

تِرا ذرّہ مَہِ کامل ہے یا غوث
تِرا قطرہ یمِ سَائل ہے یا غوث

کوئی سالِک ہے یا واصِل ہے یا غوث
وہ کچھ بھی ہو تِرا سائل ہے یا غوث

قدِ بے سایہ ظِلِّ کِبرِیا ہے
تو اس بے سایہ ظِلّ کا ظِل ہے یا غوث

تِری جاگیر میں ہے شَرق تا غَرب
قَلمرو میں حَرم تا حِلّ ہے یا غوث

دل عشق و رُخ حسن آئینہ ہیں
اور ان دونوں میں تیرا ظِل ہے یا غوث

تِری شمع دِل آرا کی تَب و تاب
گُل و بلبل کی آب و گِل ہے یا غوث

تِرا مجنوں تِرا صَحرا تِرا نَجد
تِری لیلیٰ تِرا مَحمِل ہے یا غوث

یہ تیری چمپَئی رنگت حسینی
حَسن کے چاند صبحِ دل ہے یا غوث

گلستاں زار تیری پنکھڑی ہے
کلی سو خلد کا حاصل ہے یا غوث

اُگال اس کا اُدھار اَبرار کا ہو
جسے تیرا اُلُش حاصل ہے یا غوث

اشارہ میں کیا جس نے قمر چاک
تو اس مَہ کا مَہِ کامل ہے یا غوث

جسے عرشِ دوم کہتے ہیں اَفلاک
وہ تیری کرسیِ منزل ہے یا غوث

تو اپنے وقت کا صدّیقِ اکبر
غنی و حیدر و عادل ہے یا غوث

ولی کیا مُرسَل آئیں خود حضور آئیں
وہ تیری وعظ کی محفل ہے یا غوث

جسے مانگے نہ پائیں جاہ والے
وہ بِن مانگے تجھے حاصل ہے یا غوث

فُیوضِ عالم اُمّی سے تجھ پر
عِیاں ماضی ومستَقبِل ہے یا غوث

جو قَرنوں سَیر میں عارف نہ پائیں
وہ تیری پہلی ہی منزل ہے یا غوث

مَلَک مَشْغول ہیں اس کی ثنا میں
جو تیرا ذاکر و شاغل ہے یا غوث

نہ کیوں ہو تیری منزل عرشِ ثانی
کہ عرشِ حق تِری منزل ہے یا غوث

وہیں سے اُبلے ہیں ساتوں سمندر
جو تیری نہر کا ساحل ہے یا غوث

ملائک کے بشر کے جنّ کے حلقے
تری ضَو ماہِ ہر منزل ہے یا غوث

بخارا و عراق و چِشت و اَجْمیر
تری لَو شمعِ ہر محفل ہے یا غوث

جو تیرا نام لے ذاکر ہے پیارے
تَصَوُّر جو کرے شاغِل ہے یا غوث

جو سر دے کر تِرا سودا خریدے
خدا دے عقل وہ عاقِل ہے یاغوث

کہا تو نے کہ جو مانگو ملے گا
رضاؔ تجھ سے تِرا سائل ہے یا غوث

اعلیٰ حضرت

#ManqabateGauseAazam
#NaatAcademy