LyricsNaatکلامنعت

Apne Dar Pai Jo Bulaaou Tou Bohat Achaa Ho

By July 6, 2019No Comments

Apne Dar Pai Jo Bulaaou Tou Bohat Achaa Ho
Meri Bighrri Jo Banaaou Tou Bohot Achaa Ho

Qaid e Shaitaan Se Churaaou Tou Bohat Achaa Ho
Mujh Ko Apnaa Jo Banaaou Tou Bohot Achaa Ho

Gardish e Daur Nai Paamaal Kiyaa Mujh Ko Huzur
Apne Qadmon Mai Sulaaou Tou Bohot Achaa Ho

Yun Tou Kehlaataa Hun Bandaa Mai Tumhaara Laikin
Apnaa Keh Kai Jo Bulaaou Tou Bohot Achaa Ho

Gham e Paiham Se Yai Basti Meri Wairaan Hoi
Dil Mai Ab Khud Ko Basaaou Tou Bohot Achaa Ho

Kaif Uss Baada e Gulnaar Se Miltaa Hi Nahi
Apni Ankhon Se Pilaa’ou Tou Bohot Achaa Ho

Tum Tou Murdon Ko Jilaa Daitai Ho Mere Aqaa
Mere Dil Ko Bhi Jilaaou Tou Bohot Achaa Ho

Jis Nai Sharmindah Kiyaa Mehr o Maah o Anjum Ko
Ek Jhalak Phir Woh Dikhaaou Tou Bohot Achaa Ho

Ro Chukaa Yun Tou Mai Auroun Kai Liyea Khub Magar
Apni Ulfat Mai Rulaaou Tou Bohot Achaa Ho

Yun Na Akhtar Ko Phiraaou Mere Maula Dar Dar
Apni Chaukhat Pe Bithaaou Tou Bohot Achaa Ho

اپنے در پہ جو بلاؤ تو بہت اچھا ہو
میری بگڑی جو بناؤ تو بہت اچھا ہو

قید شیطاں سے چھڑاؤ تو بہت اچھا ہو
مجھ کو اپنا جو بناؤ تو بہت اچھا ہو

گردشِ دور نے پامال کیا مجھ کو حضور
اپنے قدموں میں سلاؤ تو بہت اچھا ہو

یوں تو کہلاتا ہوں بندہ میں تمہارا لیکن
اپنا کہہ کے جو بلاؤ تو بہت اچھا ہو

غم پیہم سے یہ بستی مری ویران ہوئی
دل میں اب خود کو بساؤ تو بہت اچھا ہو

کیف اس بادۂ گلنار سے ملتا ہی نہیں
اپنی آنکھوں سے پلاؤ تو بہت اچھا ہو

تم تو مردوں کو جلا دیتے ہو میرے آقا
میرے دل کو بھی جلاؤ تو بہت اچھا ہو

جس نے شرمندہ کیا مہر و مہ و انجم کو
اک جھلک پھر وہ دکھاؤ تو بہت اچھا ہو

رو چکا یوں تو میں اوروں کے لئے خوب مگر
اپنی الفت میں رلاؤ تو بہت اچھا ہو

یوں نہ اخترؔ کو پھراؤ مرے مولیٰ در در
اپنی چوکھٹ پہ بٹھاؤ تو بہت اچھا ہو