Skip to main content
نعت

کھینچتا ہے دل کو پھر شوق گلستانِ رسولﷺ

By August 20, 2021No Comments

کھینچتا ہے دل کو پھر شوق گلستانِ رسولﷺ
بار بار آتا ہے لب پہ نام ایوانِ رسولﷺ


کب سے آہیں بھر رہے ہیں بیقرانِ رسولﷺ
اب نہیں اٹھتا ہے یارب درد ہجرانِ رسولﷺ


دیکھ کر پھولوں کی مستی وجد لاتے جائیے
سیر ہو کر کیجئے سیر گلستانِ رسولﷺ


بیقرارئ دروں میں کاش رخنے ڈالدیں
سینۂ و دل کو نوازیں آکے مژگانِ رسولﷺ


غنچہ و گل میں اُلجھ کر رہ گئے ہم جیتے جی
بند ہوئیں آنکھیں تو دیکھا روئے تابانِ رسولﷺ


پر بچھاتے ہیں ملائک آج یہ کس شوق میں
حشر میں آنے کو ہیں کیا بےقرارانِ رسولﷺ


مغفرت برسانے والا ابرِ رحمت چھاگیا
لو گنہگارو کھلی وہ زلف پیچانِ رسولﷺ


جیتے جی گلزار ہستی کی بہاریں دیکھ لوں
میرے مدفن میں میسر ہو جو بستانِ رسولﷺ


حشر میں جاکر پئیں گے ساغرِ کوثر خلیؔل
لے کے مرتے ہیں جو اپنے دل میں ارمانِ رسولﷺ

Was this article helpful?
YesNo