Skip to main content
نعت

ہیں دو عالم زیرِ فرمانِ حبیبِ کبریاﷺ

By August 22, 2021No Comments

   ہیں دو عالم زیرِ فرمانِ حبیبِ کبریاﷺ
اے تعالی اللہ یہ شانِ حبیبِ کبریاﷺ

حشر میں زیرِ لواء الحمد ہیں وقفِ جمال
ہے یہ اعزازِ غلامانِ حبیبِ کبریاﷺ

لو گنہگارو! وہ برسی رحمتِ حق کی بَھرن
لو وہ اُٹھا ابرِ بارانِ حبیبِ کبریاﷺ

ہیں بہشتِ حُسن گل بوٹے مدینے کے تمام
خلد برکف ہے گلستانِ حبیبِ کبریاﷺ

عقلِ انساں گم، ملک نا واقفِ اوجِ حضورﷺ
ہے خدا خود مرتبہ دانِ حبیبِ کبریاﷺ

ہاتھ خالی، دل غنی، کون و مکاں پر اقتدار
دیکھنا یہ سازو سامانِ حبیبِ کبریاﷺ

لوگ جاتے ہوں گے خالی ہاتھ دنیا سے مگر
میرے ہاتھوں میں ہے دامانِ حبیبِ کبریاﷺ

حشر کا دن عیدِ دیدِ رفعتِ سرکار ہے
کیجئے نظارۂ شانِ حبیبِ کبریاﷺ

طُور کا منظر نگاہوں میں ہے، اختؔر صبح و شام
جلوہ گر ہے دل میں ارمانِ حبیبِ کبریاﷺ

Was this article helpful?
YesNo