Skip to main content
نعت

ہیں اشک رواں آنکھ سے دل سوز ہیں نالے

By August 18, 2021No Comments

ہیں اشک رواں آنکھ سے دل سوز ہیں نالے
افکار زمانہ سے مجھے آکے بچالے


اے کملیا والے


ہے قلزم الحاد میں اسلام کی کشتی
ایسا نہ ہو گودوں میں بھنور اس کو چھپالے


اے کملیا والے


گرتی ہے اگر برق تو برخرمن مسلم
گرتونہ سنبھالے تو بھلا کون سنبھالے


اے کملیا والے


اخؔتر ہے غریق غم و آلام سراپا
للّلہ اسے کوچۂ طیبہ میں بلالے


اے کملیا والے

Was this article helpful?
YesNo