Skip to main content
نعت

ہر نظر کانپ اٹھے گی محشر کے دن خوف سے ہر کلیجہ دہل جائےگا

By September 8, 2021No Comments

ہر نظر کانپ اٹھے گی محشر کے دن خوف سے ہر کلیجہ دہل جائے گا

پریہ ناز ان کے بندے کا دیکھیں گے سب تھام کر ان کا دامن مچل جائےگا

موج کترا کے ہم سے چلی جائیگی رخ مخالف ہوا کا بدل جائے گا

جب اشارہ کریں گے وہ نامِ خدا اپنا بیڑا بھنور سے نکل جائے گا

یوں تو جیتا ہوں حکمِ خدا سے مگر میرے دل کی ہے ان کو یقیناً خبر

حاصلِ زندگی ہوگا وہ دن مرا ان کے قدموں پہ جب دم نکل جائےگا

رب سّلم وہ فرمانیوالے ملے کیوں ستاتے ہیں اے دل تجھے وسوسے

پل سے گذریں گے ہم وجد کرتے ہوئے کون کہتا ہے پائوں پھسل جائےگا

اخترِؔؔ خستہ کیوں اتنا بے چین ہے تیرا آقا شہنشاہِ کونین ہے

لو لگا تو سہی شاہِ لولاک سے غم مسرت کے سانچے میں ڈھل جائےگا