Naat Lyrics

کبھی حمد ہو رہی ہے، کبھی نعت ہورہی ہے

By May 8, 2020No Comments

کبھی حمد ہو رہی ہے ، کبھی نعت ہورہی ہے
اُٹھی ہوں نماز پڑھ کر ، مِری نعت ہورہی ہے

میں کہاں ہوں اتنی قابل کہ رَقم ہو نعت اُن کی
یہ تو فیض ہے اُنھِیں کا ، جبھی نعت ہورہی ہے

یہ عطا کے سلسلے ہیں ، یہ جزا کے مرحلے ہیں
جبھی نعت لکھ رہی ہوں ، تَبھی نعت ہورہی ہے

وہی دلنشیں ، معطّر ، وہی باغِ سبز گنبد
جسے دیکھ کر مہکتی ہُوئی نعت ہورہی ہے

دَر ِ مصطفی پہ آ کر جونہی جالیوں کو چوما
جو صدا بھی دل سے نکلی وہی نعت ہورہی ہے

وہی ہیں مرا وسیلہ ، اُنھِیں کے وسیلے مانگا
مری خالی جھولی بھردی ، نئی نعت ہورہی ہے

ہے گراں مری طبیعت ، نہیں سانس مِیں روانی
مری زندگی سنبھل جا ، ابھی نعت ہورہی ہے

ہے ترے کرم سے یارب یہ سُخنوری بھی رحمت
مری مغفرت کا باعث یہی نعت ہورہی ہے

مری فکر مِیں جو اُتری ، ہے سؔبیلہ روشنی سی
اُسی لَو سے لُوح ِ دل پر ، لکھی نعت ہورہی ہے

سؔبیلہ انعام صدیقی