Skip to main content
نعت

پیغامِ حسیں نسیم لائی

By August 25, 2021No Comments

شبِ ولادت

پیغامِ حسیں نسیم لائی
لو صبحِ شبِ ظہور آئی
منظر ہے سرور و کیف افزا
روشن ہیں چراغِ طُور ہر جا
ہر لمحہ پہ شانِ لیلۃ القدر
یہ رات ہے جانِ لیلۃ القدر
یہ رات، یہ حسن و ادائی حسن
در اصل ہے شاہزادئ حُسن
یہ رات ہے جُود کی، نِعَم کی
یہ رات ہے بارشِ کرم کی
یہ رات ہے روشنی مجسّم
یہ رات ہے ماہتابِ عالم
یہ رات ہے کیفِ جانِ عالم
یہ رات ہے حُسنِ شانِ عالم
یہ رات ہے جشنِ عید کی رات
یہ رات ہے صبحِ دید کی رات
واللہ عجب ہے آج کی شب
اکرام پہ رب ہے آج کی رات
ہے نور سرشت آج کی شب
ہے حُسنِ بہشت آج کی شب
باعزّ و شرف ہے آج کی شب
ہے گل بہ کنار آج کی شب
سر تا پا حسیں ہے آج کی شب
خورشید مبیں ہے آج کی شب
ہے جانِ جمال آج کی شب
ہے بدرِکمال آج کی شب
ہے مشعلِ طور آج کی شب
ہے نور ہی نور آج کی شب
ہے آج کی شب، شبِ ہلالی
ہے آج کی شب، شبِ جمالی
ہے آج کی شب، شبِ گلستاں
ہے آج کی شب، شبِ چراغاں
ہے آج کی شب، شبِ مطّہر
ہے آج کی شب، شبِ منوّر
انوار کی شب ہے آج کی شب
اذکار کی شب ہے آج کی شب
برکات کی شب ہے آج کی شب
صدقات کی شب ہے آج کی شب
انعام کی شب ہے آج کی شب
اکرام کی شب ہے آج کی شب

Was this article helpful?
YesNo