Skip to main content

استغاثہ بارگاہِ حضرت محبوب سبحانی قطب ربانی غوث الاعظم محی الدین شیخ الشیوخ سید عبدالقادر جیلانی قدس الله سرہ

جان پر بن گئی اب آئیے شیئاً للّٰہ
مشکل آساں مری فرمایۓ شیئاً للّٰہ

کشتیاں ڈوبی ہوئی آپ نے تیرائی ہیں
میری امداد بھی فرمایۓ شیئاً للّٰہ

آپ کا طالبِ دیدار ہوں غوث الثقلین
روۓ زیبا مجھے دکھلائیے شیئاً للّٰہ

اپنے دادا اسد الله کے قدموں کے طفیل
دستگیری مری فرمایۓ شیئاً للّٰہ

ہند میں بے سرو سامان رہے کب تک بیدمؔ
اس کو بغداد میں بلوائیے شیئاً للّٰہ

کلام:
بیدم شاہ وارثی علیہ الرحمہ