Skip to main content
نعت

لب پہ اشعار تِرے وصف میں جب آتے ہیں

By August 23, 2021No Comments

لب پہ اشعار تِرے وصف میں جب آتے ہیں
تذکرہ عرش پہ قدسی مرا فرماتے ہیں


ان کے تلووں سے جو ذرّات چمٹ جاتے ہیں
بخدا عرش کے تارے وہی کہلاتے ہیں


تِری راہوں میں کچھ ایسے بھی مقام آتے ہیں
منزلِ قربِ الہٰی سے جو مِل جاتے ہیں


مدنی چاند تِرا ذکر جہاں ہوتا ہے
عالمِ قدس کے انوار اُتر آتے ہیں


خلد کی سمت چلا، کوئی حرم کی جانب
اُن کے دیوانے مدینے کی طرف جاتے ہیں


مرتبہ تیرے غلاموں کا کوئی کیا جانے؟
جب مَلَک آنکھ مِلاتے ہوئے شرماتے ہیں


رات دن سوئے مدینہ ہے نظر اے اختؔر
یاد کب دیکھئے آقاﷺ مجھے فرماتے ہیں

Was this article helpful?
YesNo