Skip to main content
نعت

عکسِ جمالِ ذات نہ دیکھا تِرے سِوا

By August 21, 2021No Comments

عکسِ جمالِ ذات نہ دیکھا تِرے سِوا
مظہر خدا کا ہم نے پایا تِرے سِوا


کیا مانگے تجھ سے یہ تِرا منگتا تِرے سِوا
دل میں نہیں ہے کوئی تمنا تِرے سِوا


کِس کی جبینِ عرش میں یہ آب و تاب ہے
ہے کس کا ثبت نقشِ کفِ پا تِرے سِوا


کعبہ کو جس نے قبلۂ عالم بنا دیا
تھی کس کی چشمِ ناز وہ شاہا تِرے سِوا


کِس کی رضا ہے مرضئ خالِق سے ہمکنار
ہے کس کے سر پہ تاجِ فَتَرضیٰ تِرے سِوا


یہ سیلِ حسن و نُور، یہ طوفانِ رنگ و بُو
ہے کون جلوہ گر پسِ پردا تِرے سِوا


دنیا ہزار حُسن دکھاتی رہی مگر
تیرا جو تھا کِسی کو نہ چاہا تِرے سِوا


پیشِ نظر ہے آیۂ اَتْمَمْتُ نِعْمَتِیْ
ہے دین کون؟ کون ہے دنیا تِرے سِوا


پوری ہو اَب تو اختؔرِ بےکس کی آرزو
کِس سے کہے یہ سرورِ والا تِرے سِوا

Was this article helpful?
YesNo