Skip to main content
نعت

صلہ خوب پائے اِدھر سے اُدھر سے

By August 27, 2021No Comments

اِدھر سے اُدھر سے

صلہ خوب پائے اِدھر سے اُدھر سے
مدینے جو آئے اِدھر سے اُدھر سے
نگاہوں میں جچتی نہیں کوئی جنت
جو طیبہ کو جائے اِدھر سے اُدھر سے
ترے در کے ٹکڑوں پہ جب ہے گزارہ
تو لو کیوں لگائے اِدھر سے اُدھر سے
درِ مصطفیﷺ سے چمک اٹھی قسمت
نہ اب آزمائے اِدھر سے اُدھر سے
غبارِ مدینہ جو سینے پہ مل لے
یہ دل جگمگائے اِدھر سے اُدھر سے
گدائے نبیﷺ ہوں تو در پہ پڑا ہوں
نہ کوئی اٹھائے اِدھر سے اُدھر سے
سگِ غوث و برکت ہوا جب سے حافؔظ
صلہ سب سے پائے اِدھر سے اُدھر سے
(۲۷ ستمبر ۲۰۱۵؁ء/ ۱۲ ذی الحجہ ۱۴۳۶؁ ھ)

Was this article helpful?
YesNo