Skip to main content
نعت

زندگی ہم کو ملی سرورِ ذیشاںﷺ کے طفیل

By August 22, 2021No Comments

زندگی ہم کو ملی سرورِ ذیشاںﷺ کے طفیل
یہ بہاریں ہیں اسی جانِ بہاراںﷺ کے طفیل


پھول ہنستے ہیں تمہارے لبِ خنداں کے طفیل
جگمگاتے ہیں ستارے درِ دنداں کے طفیل


شب مہک بار ہے زلفِ شہِ دوراںﷺ کے طفیل
مہر درکف ہے سحر، عارضِ تاباں کے طفیل


آپﷺ کی ذات ہُوَاللہُ اَحَد کی ہے دلیل
رب کا عرفان ہوا آپﷺ کے عرفاں کے طفیل


بقعۂ نور ہے ہر گوشۂ ایوانِ حیات
بدر کے چاند ترے روئے درخشاں کے طفیل


نامِ نامی ہے سرِ لوحِ کتابِ ہستی
زندگی ہوگئی اَنمول اِسی عنواں کے طفیل


نہیں شکوہ مجھے اب بے سر و سامانی کا
بخدا تِری تمنّا، تِرے اَرماں کے طفیل


صدقے ہو کر تِری زلفوں پہ برستی ہے گھٹا
ابر اٹھتا ہے ترے سایۂ داماں کے طفیل


شاعرِ بزمِ رسالتﷺ ہے خطابِ اختؔر
یہ اُسے اَوج مِلا حضرتِ حسّاں کے طفیل

Was this article helpful?
YesNo