Skip to main content
نعت

روشن زمیں ہوئی تو حسیں آسماں ہوا

By August 17, 2021No Comments

روشن زمیں ہوئی تو حسیں آسماں ہوا
نورِ رخِ نبیﷺ سے منور جہاں ہوا


صد شکر اے وفورِ مسرت کے آنسوؤں
دامانِ عشق غیرتِ ہفت آسماں ہوا


مٹ کے غبار راہ دیار نبیﷺ بنا
میں یوں شریک قافلئہ کہکشاں ہوا


کیا خوب ہے کمال تصرف کی یہ مثال
پروردۂ نبیﷺ پہ خدا کا گماں ہوا


چشم علی میں کیوں نہ ہوں یکساں شہود و غیب
زیب نگاہ کحل لعاب دہاں ہوا


نعت رسولﷺ آیۂ رحمت کا ہے کرم
میں ہم زبان انجمن قدسیاں ہوا


اخؔتر یہ راز فہم بشر کیا سمجھ سکے
کیسے مکان(۱) زیب دۂ لامکاں ہوا
 

Was this article helpful?
YesNo