Skip to main content
Lyricsمنقبت

ذکر تیرا ہو زباں پر یاعلی مولا علی

By May 25, 2019No Comments

ذکر تیرا ہو زباں پر یاعلی مولا علی
یاد ہو سینے کے اندر یاعلی مولا علی

جس کے مولا ہیںمحمد اس کے مولا آپ ہیں
میرے آقا میرے سرور یاعلی مولا علی

دین و دنیا کی بھلائی چاہتے ہیں آپ سے
ہے ہمارا حال ابتر یاعلی مولا علی

آپ کے در کے بھکاری مانگنے جائیں کہاں
آپ کی چوکھٹ سے اٹھ کر یاعلی مولا علی

دل کے دروازے پہ لکھا ہے ترا اسمِ جلی
ورد جاری ہے زباں پر یاعلی مولا علی

نام کی برکت سے مل جاتی ہے ہر دکھ کی دوا
ہے قرارِ قلبِ مضطر یاعلی مولا علی

اپنے دستِ پاک سے منگتوں کو اب دے دیجیے
صدقۂ شبیر و شبر یاعلی مولا علی

اس اویسِؔ بے نوا کو اپنی رحمت سے کریں
کارِ مدحت پر مقرریاعلی مولا علی

ابو الفیض اویس رضوی صدیقی