Skip to main content
نعت

دعا ہے زندگانی یوں بسر ہو

By August 12, 2021No Comments

دعا ہے زندگانی یوں بسر ہو

ثنا خوانی نبی کی عمر بھر ہو

اسی جانب کو جھک جاتا ہے کعبہ

مرے محبوب رُخ تیرا جِدھر ہو

الہٰی اس طرح دنیا سے جاؤں

جمالِ مصطفی پیش نظر ہو

جسے نسبت ہے ان کے نقشِ پا سے

وہ ذَرّہ کیوں نہ صدر شکِ قمر ہو

مدینے اِس طرح جاؤں خدایا

تمنّائے نبی زادِ سَفر ہو

مری تاریک راتیں جگمگا دو

کبھی سوئے غریباں بھی نظر ہو

ہر اساں ہو مصیبت میں وہ کیو ں کر

تمہارے لطف پر جس کی نظر ہو

وہیں تربت بنے خالدؔ کی یارب

ترے محبوب کی جو رِہ گزر ہو

Leave a Reply