Skip to main content
نعت

غازۂ دین غبارِ رہِ جاناں ہوجائے ﷺ

By August 20, 2021No Comments

غازۂ دین غبارِ رہِ جاناں ہوجائے
رہروِ دشتِ مدینے کا یہ ساماں ہوجائے


کیوں نہ نازاں ہو مقدر پہ میسّر جس کو
خاک بوسئ درِشاہِ رسولاں ہوجائے


مجھ کو فرصت نہ ملے طیبہ سے لوٹ آنے کی
وصل دائم سے مبدّل غم ہجراں ہوجائے


اے ملیح عربی تیری ملاحت کے نثار
لطف آئے جو ہر اک زخم نمکداں ہوجائے


کوئے جاناں میں ہوں یوں پاس ادب ہے ورنہ
پرزے پرزے تو ابھی جیب و گریباں ہوجائے


بلبلِ باغِ مدینہ جو چہک اٹھے خلیؔل
باغِ فردوس کا ہر مرغ غزل خواں ہوجائے

Was this article helpful?
YesNo