Skip to main content
نعت

درخشاں میری قسمت ہے اُدھر کعبہ اِدھر روضہ

By August 27, 2021No Comments

اُدھر کعبہ اِدھر روضہ

درخشاں میری قسمت ہے اُدھر کعبہ اِدھر روضہ
مسلسل مجھ پہ رحمت ہے اُدھر کعبہ اِدھر روضہ
غلافِ کعبہ آنکھوں سے لگایا ہے اِدھر جالی
مسّرت ہی مسّرت ہے اُدھر کعبہ اِدھر روضہ
اُدھر میزاب رحمت ہے اِدھر سرکار خود رحمت
سراپا ظّل راحت ہے اُدھر کعبہ اِدھر روضہ
اُدھر آغوشِ کعبہ ہے اِدھر آغوشِ جنت ہے
زِسرتا پاموَدّت ہے اُدھر کعبہ اِدھر روضہ
مقام اِبْرَہیمی واں اِدھر محراب و منبر ہے
نُضارت ہی نضارت ہے اُدھر کعبہ اِدھر روضہ
صفا مروہ اُدھر ہے تو قُبا کی اس طرف برکت
عبادت ہی عبادت ہے اُدھر کعبہ اِدھر روضہ
حرا کے اُس طرف جلوے اُحُدْ ہے اِس طرف تاباں
بشارت ہی بشارت ہے اُدھر کعبہ اِدھر روضہ
اُدھر عرفات و مزدلفہ‘ اِدھر ہے مشہدِ حمزہ
کرم ہے نور و نگہت ہے اُدھر کعبہ اِدھر روضہ
چلو حافؔظ ذرا جلدی وہ دیکھو نوری نظّارے
مثال حُسن جنت ہے اُدھر کعبہ اِدھر روضہ
(۱۰ رمضان المبارک ۱۴۳۷ھ/ ۱۵ جون ۲۰۱۶؁ء نزیل، مدینہ منورہ)

Was this article helpful?
YesNo