Skip to main content
نعت

خاکِ وطن سے دور بلا لیجئے مجھے

By August 23, 2021No Comments

خاکِ وطن سے دور بلا لیجئے مجھے
طیبہ میں اب حضورﷺ بُلا لیجئے مجھے


لطفِ عمیم آپﷺ، رؤف و رحیم آپﷺ
میں ہُوں ہمہ قصور بلا لیجئے مجھے


خالی ز حُسن و کیف بہ ہر کیف ہے حیات
تا بزمِ رنگ و نور بلا لیجئے مجھے


مومن کی جان سے بھی زیادہ قریں ہیں آپ
کیا آپ سے ہے دُور بلا لیجئے مجھے


معراجِ دیدِ گنبدِ خضرٰی نصیب ہو
جانِ کلیمِ طُور بلا لیجئے مجھے


تیرِ حوادثات کی بارش ہے روز و شب
زیرِ ردائے نور بلا لیجئے مجھے


اے مستقل نشاط، ہمہ کیفِ سرمدی
تامنزلِ سُرور بلا لیجئے مجھے


اے کارسازِ اخترِؔ محتاج و بے نوا
امسال تو ضرور بلا لیجئے مجھے!

Was this article helpful?
YesNo