Skip to main content
نعت

حبیبِ کُلﷺ جہاں تم ہو دلیل کُنْ فَکاں تم ہو

By August 26, 2021No Comments

دلیل کُنْ فکاں تم ہو

حبیبِ کُلﷺ جہاں تم ہو دلیل کُنْ فَکاں تم ہو
خلیل بزم وحدت ہو خدا کے رازداں تم ہو
تم ہی تو جان رحمت ہو تمہیں شانِ نبوتﷺ ہو
امام المرسلیںﷺ تم ہو ہر اک عالَم کی جاں تم ہو
مکین گنبد خضراء تمہارا وصف ہے ورنہ
حقیقت میں اگر دیکھیں مکین کُل جہاں تم ہو
قرآں کے تیس پارے بھی فقط تم ہی پہ اترے ہیں
تمہاری ذات ہے جامع ہر اک شی کا بیاں تم ہو
ہوئی ہے چاک تم سے ہی رِدائے ظُلمتِ عالم
منور ہے جہاں تم سے کہ خورشید جہاں تم ہو
ابوبکر و عمر بھی تھے وہاں عثمان و حیدر بھی
نہ پائے جس حقیقت کو، وہ ہی سِّرِ نہاں تم ہو
وہ کوئی اور ہوں گے جو نہیں ملتے نشاں سے بھی
میں کیوں ڈھنڈوں تمہیں آقاﷺ یہاں تم ہو وہاں تم ہو
ہر اک محتاج و بیکس بس تمہارے پاس آتا ہے
ہر ایک نعمت میسّر ہے جہاں تم ہو جہاں تم ہو
جہاں میں لاج رکھی ہے تم ہی نے اپنے حافؔظ کی
سر محشر نکمّے کی اَماں تم ہو امَاں تم ہو
(۶ صفر المظفر ۱۴۳۹؁ھ ۲۷ اکتوبر ۲۰۱۷ بوقت فجر) بروز جمعتہ المبارک