Skip to main content
نعت

جمال و حسن کا منظر، نہ یہ کم ہے نہ وہ کم ہے

By August 26, 2021No Comments

نہ یہ کم ہے نہ وہ کم ہے

جمال و حسن کا منظر، نہ یہ کم ہے نہ وہ کم ہے
نوال و جُود کا مظہر، نہ یہ کم ہے نہ وہ کم ہے
نبوت اِنﷺ کی اعلیٰ ہے، رسالت اِنﷺ کی بالا ہے
زمانہ دیکھ لے آکر، نہ یہ کم ہے نہ وہ کم ہے
عطا اِن کی ہے دنیا میں، شفاعت اِن کی اُخریٰ میں
یہی ہیں صاحبِ کوثر، نہ یہ کم ہے نہ وہ کم ہے
خزانہ اِن کا بھاری ہے، عطا و فیض جاری ہے
سخی یہ لُطف کا محور، نہ یہ کم ہے، نہ وہ کم ہے
چمک ان کی زمانے میں، دمک دل کے خزانے میں
یہ ساری خلق سے برتر، نہ یہ کم ہے، نہ وہ کم ہے
ہر اک صاحب ستارہ ہے، ولی ہر ایک پیارا ہے
ہیں دونوں باغ کے گل تر، نہ یہ کم ہے نہ وہ کم ہے
جسے ہے اُلفتِ کامل، غلامی ہے اُسے حاصل
تجھے حافظِ سرِ منبر، نہ یہ کم ہے نہ وہ کم ہے
(۲ اگست ۲۰۱۵؁ء ۱۶ شوال ۱۴۳۶؁ھ)

Was this article helpful?
YesNo