Skip to main content
نعت

جب غلامانِ محمد کو جلال آتا ہے

By اپریل 11, 2021No Comments

جب غلامانِ محمد کو جلال آتا ہے
وقت کے ظالم و جابر کو زوال آتا ہے

یہ جو حاکم ہیں ، یہ نمرود سے جاکر پوچھیں
آگ میں پڑ کے "خلیلی” کو کمال آتا ہے

یہ سبق وقت کے فرعون کو معلوم نہیں
جتنا ہم دبتے ہیں اُتنا ہی اُچھال آتا ہے

نامِ آقا پہ لٹاتے ہیں خوشی سے سب کچھ
رنج آتا ہے ہمیں اور نہ ملال آتا ہے

خون سے ہوتی ہے زرخیز محبت کی زمیں
اُن پہ مٹ کر چمن جاں پہ جمال آتا ہے

سامنے موت کھڑی ہوتی ہے جب آنکھوں کے
عشق میں اور ہی پھر ذوقِ وصال آتا ہے

عظمتِ حق پہ فدا ہونا ہمارا مشرب
اک نیا جوش ہمیں وقتِ قتال آتا ہے

سر اٹھاتے ہیں کہیں پر جو نبی کے گستاخ
لے کے فاروق کا خنجر کوئ لال آتا ہے

آزما لے ہمیں ، میدان میں آکر ظالم
ہر ستم میں ہمیں کردارِ بلال آتا ہے

قید ہوں گے نہ شریعت کے اجالے ہرگز
جب اندھیرا ہو مکمل تو ہلال آتا ہے

سر کے نذرانے بھی کرتے ہیں فریدی ہم پیش
جب بھی ملت کی حفاظت کا سوال آتا ہے

از فریدی صدیقی مصباحی

Jb ghulaman e Mohammad ko jalaal aata hai
waqt ke zalim o jabir ko zawaal aata hai

ye jo hakim hain, ye namrood se ja kar pouchen
aag main par ke "khalili” ko kamaal aata hai

ye sabaq waqt ke fir’on ko maloom nahin
jitna hum dabte hain utna hi Uuchaal aata hai

Naam e Aaqa pe lutate hain khushi se sab kuch
ranj aata hai hamain aur na malaal aata hai

khoon se hoti hai zarkhaiz mohabbat ki zamee’n
un pe mit kar chaman e jaan pe jamal aata hai

samne mout khari hoti hai jab aankhon ke
ishq main aur hi phir zouq e visaal aata hai

azmat e haq pe fida hona hamara mashrab
ik naya josh hamain waqt e qataal aata hai

sar uthate hain kahin par jo Nabi ke gustakh
le ke Farooq ka khanjar koyi laal aata hai

aazma le hamain, maidan main aa kar zalim
har sitam main humain kirdaar e bilaal aata hai

qaid hon ge na shariyat ke ujale hargiz
jab andhera ho mukammal to Hilaal aata hai

sar ke nazrane bhi karte hain Fareedi hum paish
jab bhi millat ki hifazat ka sawaal aata hai

Az:Fareedi Siddiqui Misbahi

Http://instagram.com/naatacademy

Home