Skip to main content
نعت

تو ہے سرور میں ہوں کم تر تو کہاں اور میں کہاں

By August 28, 2021No Comments

تو کُجا مَنْ کُجا ( تو کہاں اور میں کہاں)

تو ہے سرور میں ہوں کم تر تو کہاں اور میں کہاں
میں ہوں ادنیٰ تو ہے برتر تو کہاں اور میں کہاں
تو حبیب ربِّ کعبہﷺ مالک ہرایں و آں
میں ہوں سائل تیرے در پر تُو کہاں اور میں کہاں
تیری خوشبو کل جہاں میں مہکی مہکی ہر فضا
تجھ سے ہر کوچہ معطّر تو کہاں اور میں کہاں
کیا عجم ہے کیا عرب ہے ہر طرف تیرا کرم ہے
نعت تیری سب کے لب پر تُو کہاں اور میں کہاں
اِک نگِاہ لطف مجھ پر اے شہ فضل و رضا
تو رضائے ربِّ اکبر تو کہاں اور میں کہاں
تیرے ذکر پاک سے معمور ہیں ارض و سما
ذکر تیرا خوب گھر گھر تو کہاں اور میں کہاں
وَالضُّحیٰ ہے روئے انور زلف وَالَّلیل سَجیٰ
ہر ادا تیری منور تو کہاں اور میں کہاں
تو ہے قرآن مُجسّم اے شفیع المذنبین
ہر جہاں ہے نعت سرور تو کہاں اور میں کہاں
مدح خواں حافؔظ ہے تیرا، ہے تیرا لطف و کرم
یہ زباں اور ذکر اطہر تو کہاں اور میں کہاں
(۲۵ جمادی الاخریٰ ۱۴۳۹ھ ۱۴ مارچ ۲۰۱۸ء)

Was this article helpful?
YesNo