Skip to main content
نعت

آقا تمہاری ذات کا دھیان رہ نہ جائے

By September 6, 2021No Comments

آقا تمہاری ذات کا دھیان رہ نہ جائے
مدّت کا ایک دل میں ارماں رہ نہ جائے

ہوکر تِرے بھکاری کیوں جائیں غیر کے دَر
اَوروں کا ہم پہ کوئی احسان نہ جائے

ہے دعوتِ شفاعت محشر میں عاصیوں کو
محروم اس سے کوئی مہمان رہ نہ جائے

بحرِ کرم سے آقا سارے گناہ دھو دو
ہم عاصیوں پہ داغِ عصیاں نہ جائے

سرکار محشر میں جب بخشائیں عاصیوں کو
رکھنا خیال اتنا بُرہان نہ جائے

بُرہانؔ کھڑا ہے در پر دامن رضا کا تھامے
تیری گلی کا منگتا بے نان نہ جائے